کویت

تارکین وطن ملازمین کے ویزوں کی منتقلی پر نئی شرائط عائد

حکومت کویت نے تارکین وطن کارکنان پر نجی شعبوں میں بھرتی کے لئے نئی شرائط عائد کردیں ۔کویت میں لیبر مارکیٹ کو منظم کرنے اور تارکین۔وطن کارکنان کے سرکاری و نجی شعبوں میں شرح کم کرنے کے لئے پبلک اتھارٹی آف مین پاور نے سول سروس کمیشن اور وزارت داخلہ کے تعاون سے نئی شرائط عائد کردیں۔ عوامی تعلقات , اتھارٹی اور ذرائعِ ابلاغ کے ترجمان کے مطابق اگلے چند دنوں کے اندر ان شرائط کا اعلان کردیا جائے گا اور جلد ہی تارکین۔وطن ملازمین کی بھرتی سے متعلق نئے قوانین کا اطلاق بھی کیا جائے گا۔ ان قوانین و شرائط کا مقصد آبادی میں عدم توازن اور لیبر مارکیٹ کی بحالی ہے ۔

بیان کے مطابق وہ تارکین وطن جو نجی شعبوں سے سرکاری شعبوں میں منتقلی چاہتے ہیں انکے لئے سول سروس کمیشن سے منظوری حاصل کرنا لازمی قانون ہے ۔ایسے ملازمین کو اپنی اقتصادی صورتحال اور کانٹریکٹ کی ضروریات سے آگاہ کرنا پڑے گا ۔
اس بات کو بھی واضح کردیا گیا کہ اس قانون کا مقصد ملازمین کی پپشہ ورانہ صلاحیتوں اور تعلیمی کارکردگی کی جانچ ہے اس بات کو جاننا بہت اہم ہے یہ متعلقہ کارکن ملازمت کا مستحق ہے یا نہیں۔ سینٹرل ایڈمنسٹریشن کی جاری کردہ فہرست کے مطابق ملک بھر میں 2.2 ملین ملازمین ہیں ۔ جن میں کویتی ملازمین کی تعداد 3,61,500ہے جبکہ 1.7 تارکین وطن۔ملازمین ہیں جن میں غیرعرب ایشیائی ملازمین50.6 فیصد کے ساتھ سب سے ذیادہ تعداد میں ہیں جبکہ عرب 29.9 فیصد ہیں ۔

To Top