پاکستان

حکومت نے پنجاب کے عوامی مقامات پر مفت وائی فائی کی سہولت ختم کرنے کا اعلان کر دیا

لاہور: گزشتہ دو سال سے پنجاب کے بڑے شہروں میں وائی فائی کی مفت سہولت دی گئی تھی،جو اب بند ہونے جا رہی ہے۔2017 سے اب تک پنجاب انفارمیشن ٹیکنالوجی بورڈکی طرف سے عوامی مقامات پرشہریوں کو وائی فائی کی مفت سہولت دستیاب تھی،جس کے تحت لاہور،ملتان اورراولپنڈی میں 200 سے زائد مقامات پر شہری وائی فائی کی سہولت سے مستفید ہوسکتے تھے۔یہ سہولت ( پی ٹی سی ایل) کی جانب سے فراہم کی جا رہی تھی تاہم ذرائع کا کہنا ہے کہ ادارے کو واجبات کی ادائیگی نہیں کی گئی،جو کہ 15 کڑوڑ روپے ہے۔
پنجاب انفارمیشن ٹیکنالوجی بورڈ کا کہنا ہے کہ اس منصوبے کو جاری رکھنے کیلئے 19 کروڑ روپے درکار ہیں لیکن پنجاب حکومت نے اس اقدام کو سرکاری خزانے پر بوجھ قراردیتے ہوئے بندکردیا ہے ، حکومتی بجٹ میں بھی اس منصوبے کے لئے کوئی رقم مختص نہیں کی گئی ہے۔جبکہ اس منصوبے پرکام کرنے والے پنجاب انفارمیشن ٹیکنالوجی بورڈکے ملازمین کو بھی فارغ کردیا جائیگا۔
لاہور اور دوسرے بڑے شہروں میں ریلوے اسٹیشن ، میٹرواسٹیشن، ائیرپورٹ ، کالجز، یونیورسٹیوں اورپبلک مقامات پر وائی فائی کی مفت سہولت بند ہونے پرعام شہریوں کے علاوہ طلبا وطالبات کو پریشانی کا سامنا کرنا پڑرہا ہے ، یونیورسٹی اورکالجز کے طلبا وطالبات اس سہولت سے خاصے مستفید ہورہے تھے، یاد رے کہ لاہور پریس کلب میں صحافیوں کے لئے بھی وائی فائی کی مفت سہولت میسرتھی جواب بند ہوگئی۔

To Top