پاکستان

سپریم کورٹ نے بیرون ملک پاکستانیوں کے اکاؤنٹس اور جائدادوں کی رپورٹ طلب کرلی

اسلام آباد: بیرون ملک مقیم پاکستانیوں کی جائدادوں اور بینک اکاؤنٹس کی پیشرفت رپورٹ طلب کرلی گئی! چیف جسٹس آف پاکستان کی سربراہی میں سپریم کورٹ میں بیرون ملک پاکستانیوں کے اثاثوں اور بینک اکاؤنٹس سے متعلق کیس کی سماعت ہوئی اور اس سلسلے میں فیڈرل بورڈ آف ریونیو کے ممبر آڈٹ اور ڈی جی ایف آئی اے بشیر میمن بھی عدالت میں حاضر ہوئے۔ممبر آڈٹ کی رپورٹ کے مطابق ایف آئی اے نے 895 لوگوں کا ڈیٹا فراہم کیا تھا جبکہ 1365 جائدادوں کے متعلق بتایا گیا تھا,تاہم 270 ملین سے ذیادہ کی ریکوری ہوئی ہے جبکہ 768 ملین کی ریکوری متوقع ہے۔
ممبر آف آڈٹ نے بتایا کہ 360 افراد نے 484 جائیدادیں پر ایمنسٹی حاصل کرلی ہے اور کچھ لوگوں نے کرایے بھی ظاہر نہیں کئے ۔اس صورتحال پر چیف جسٹس نے ریمارکس دیئے کہ آپ لوگوں کا کام انتہائی سست روی کا شکار ہے تمام ڈیٹا موجود ہونے پر بھی کوئی پیشرفت نہیں ہوئی لہذا ایکشن کا عمل تیز کریں اور لوگوں کو نوٹس جاری کریں ۔

To Top